32

ننکانہ صاحب میں فائرنگ سے احمدی کمیونٹی سے تعلق رکھنے والا شخص ہلاک

صوبہ پنجاب کے ضلع ننکانہ صاحب کی تحصیل شاہ کوٹ کے قصبہ سانگلہ ہل میں فائرنگ سے احمدی کمیونٹی سے تعلق رکھنے والا شخص ہلاک ہوگیا۔

پولیس کے مطابق گزشتہ روز مہد نامی نوجوان نے گھر کے دروازے پر فائرنگ کرکے ڈاکٹر طارق نامی شخص کو ہلاک اور گھر میں موجود تین افراد کو زخمی کردیا تھا۔

 پولیس کا کہنا ہے کہ زخمیوں کو طبی امداد کیلئے اسپتال منتقل کیا گیا۔

پولیس کے مطابق واقعے میں ملوث ملزم کو گرفتار کرلیا گیا ہے۔

وزیراعظم عمران خان کے نمائندہ خصوصی برائے مذہبی ہم آہنگی اور چیئرمین پاکستان علماء کونسل مولانا طاہر اشرفی نے احمدی برادری کے افرادکے قتل کی مذمت کرتے ہوئےکہا ہےکہ علماء کا اس بات پر اجماع ہےکہ ایک شخص کا قتل انسانیت کے قتل کے برابر ہے۔

مولانا طاہر اشرفی نے ایک بیان میں کہا ہےکہ اگرکوئی جرم یا گناہ کرتاہے تو اس کو سزادینا حکومتوں اور عدالتوں کی ذمہ داری ہوتی ہے۔

ان کاکہنا تھا کہ وزیراعظم عمران خان کی ہدایات کےمطابق پشاور اور ننکانہ صاحب میں ہوئے قتل کے واقعات کی تحقیقات ہونگی۔

انہوں نے مزید کہا کہ ملک میں کسی فرد،گروپ یا تنظیم کو ماورائے عدالت قتل اور فساد پھیلانےکی اجازت نہیں دی جاسکتی ہے۔



Source link

0/5 (0 Reviews)

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں